جی بی پنتھ اسپتال بد انتظامی کا شکار

وادی میں بچوں کیلئے قائم جی بی پنتھ ہسپتال میں انتظامیہ کی جانب سے بار بار کئے جانے والے اعلانات کے باوجود یہ ہسپتال بد انتظامی کی بدولت اپنی افادیت کھورہا ہے۔ہسپتال کی بدانتظامی کے باعث بیماربچوں کے والدین غیر سرکاری ہسپتالوں یا نرسنگ ہوموں ہی کا رُخ کرنے میں عافیت سمجھتے ہیں۔
ہسپتال میں زیر علاج بیمار بچوں کے والدین کا الزام ہے کہ اکثر اوقات تیمارداروں کواپنے بچوں کے ٹیسٹ پرائیویٹ کرانے پڑتے ہیں یا صدر ہسپتال کا رخ کرنا پڑتا ہے۔ہسپتال میںتیمارداروںسے بچوں کی صحت یابی پر بخشش یامبارک جیسے ناموں پربھاری نذرانے وصول کئے جاتے ہیں جو غریب لوگوں کیلئے بہت بڑا بوجھ ثابت ہوتاہے۔ہسپتال کانظام بہتر بنانے کیلئے وقتاً فوقتاً کئی اقدامات کا اعلان کیا گیا تھا جو صرف کاغذی گھوڑے ثابت ہوئے۔
بیروہ کے عبدالرشید جس کا بیٹا گذشتہ ایک ہفتے سے ہسپتال میں زیرِ علاج ہے، کا کہنا ہے”ٹیسٹ کرنے کیلئے یہاں کوئی تربیت یافتہ عملہ نہیں ہے کیونکہ میرے بچے کے دو ٹیسٹ کرائے گئے لیکن بچوں کے ہسپتال اور صدر ہسپتال میں کرائے گئے ایک ہی ٹیسٹ کی رپورٹ مختلف دی گئی اور اس تفاوت کی وجہ سے بچے کے علاج کا عمل بری طرح سے متاثر ہوا ہے“۔خورشید احمدجس کا بھائی گذشتہ چار دن سے انتہائی طبی نگہداشت والے یونٹ (آئی سی یو)میں زیر علاج ہے ،نے بتایا”آئی سی یو میں تقریباً ایک درجن کے قریب بیمار بچے داخل ہیںلیکن رات کے دوران ایک ہی ڈاکٹر ان کے علاج کیلئے موجود رہتا ہے “۔انہوں نے مزید کہا ”اگرچہ مذکورہ ڈاکٹر اپنے فرائض بحسن و خوبی انجام دےتا ہے تاہم ایک ہی ڈاکٹر وارڈ کی ضرورت پورا نہیں کرپاتا ہے“۔
ہسپتال کے میڈکل سپرانٹنڈنٹ ڈاکٹر وسیم احمد قریشی اس ضمن میں کہتے ہیں:”میرے پاس ایسی کوئی شکایت نہیں آئی ہے ۔“ تاہم تیمارداروں نے اِس کے ردِ عمل میں کہا کہ تجربے سے ثابت ہوا ہے کہ ملازم کی شکایت کرنا ،بیمار کیلئے آفت کو دعوت دینا ہے،جو مختلف حیلوں بہانوں سے بیماروں کو تنگ کرتے ہیں۔
میڈیکل سپرانٹنڈنٹ نے مزید کہا کہ جہاں تک آئی سی یو کا تعلق ہے ریاست اور بیرون ریاست میں بھی مذکورہ وارڈ کیلئے ایک ہی ڈاکٹر ڈیوٹی پر رہتا ہے۔

Advertisements

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: