بھارت گمنام قبروں کا معاملہ سنجیدگی سے لے:افاد

گمشدہ افراد کے لواحقین کی تنظیم اے پی ڈی پی کی ہزار بے نام قبروں سے متعلق سنسنی خیز انکشافی رپورٹ منظر عام پر آنے کے بعدایشین فیڈریشن اگینسٹ انوالنٹری ڈس اپیرنسز(AFAD) نے وادی میں گمنام قبروں کے بارے میں اپنی تشویش سے حکومت ہند کو آگاہ کیا ہے۔افاد نے حکومت ہند پر زور دیا ہے کہ وہ اوڑی علاقے کے18گاﺅں میں 940گمنام قبروں کی دریافت کے معاملے کو سنجید گی سے لے اور اس حوالے سے تفصیل تحقیقات عمل میں لائے کیونکہ افاد کے مطابق یہ حکومت ہند کی ذمہ داری بنتی ہے ۔تنظیم کی جنرل سیکریڑی میری ایلین ڈی بیکالسوا ور چیر پرسن مگیانتو نے اپنے ایک بیان میں 940بے نام قبروں کے حوالے سے اپنی تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ ایک ایسا مسئلہ ہے جس پر فوری کارروائی واجب بن جاتی ہے اور اگر اقوام متحدہ کے جبری گمشدگیوں کے کنونشن پر کئے گئے دستخط کو بھارت سنجید گی سے لیتا ہے تو بھارت سرکار کو کسی بھی تاخیر کے بغیر اس کی تحقیقات عمل میں لانی چاہئے ۔بیان میںمزید کہا گیاہے کہ جمون کشمیر کے وزیر اعلیٰ مفتی محمد سعید کے دور حکومت میں گمشدہ افراد کے لواحقین نے بھوک ہڑتال کرکے اس نا انصافی کے خلاف مظاہرہ کیا تھا۔جس کے بعد بیان کے مطابق مفتی محمد سعید نے 3734جبری گمشدگیوں کا اعتراف کیا تھا لیکن اعتراف کرنے کے باوجود پانچ سال بعد بھی کوئی خاطر خواہ کارروائی عمل میں نہیں لائی گئی۔افاد کے مطابق 940بے نام قبروں کے منظر عام پر آنے کے بعد اب بھارت کے پاس کارروائی کرنے کا صحیح موقع ہے۔حراستی گمشدگیوں کے اعتراف کو ایک مثبت قدم گردانتے ہوئے مذکورہ تنظیم نے بھارت سرکار اور ریاستی سرکار پر زور دیا ہے کہ اس ضمن میں سیاسی عزم کا مظاہر کرکے تحقیقات شروع کرے تاکہ گمشدہ افراد کے لواحقین کو انصاف ملے جس کے وہ حقدار ہےں۔بیان میںکہا گیا ہے کہ قبروں میں مدفن افراد کے باقیات کی جانچ اور ان سے ملے نتائج کو گمشدہ افراد کے لواحقین سے سائنسی بنیادوں پر ملا کر گمشدگیوں کے کئی معاملے حل ہو سکتے ہیں۔بیان کے مطابق جبری گمشدگیوں سے لوگوں کو تحفظ دینے کے حوالے سے اقوام متحدہ کے کنونشن پر دستخط کرنے کے باوجود بھارتی سرکار ابھی اس وعدے کو پورا نہیں کرپاتی ہے اور ابھی تک بھی بھارت اس طرح کا کوئی میکانزم ترتیب نہیں دے سکا ہے جس سے کہ مذکورہ کنونشن کی عمل آوری یقینی بن سکے۔

Advertisements

One Response to بھارت گمنام قبروں کا معاملہ سنجیدگی سے لے:افاد

  1. FAYAZ WANI نے کہا:

    THIS IS THE WORLD’S SO CALLED LARGEST DEMOCRACY WHERE THESE THINGS HAPPEN WITHOUT ANY SIGNS OF REGRET ON THEIR FACES

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: