کیا میرا دعویٰ سچ ثابت نہیں ہوا؟۔۔۔پی ڈی پی سے عمر کا سوال

Omer Abdullahنیشنل کانفرنس کے کارگزار صدر اور سابق وزیر اعلیٰ عمر عبداللہ نے پیپلز ڈیموکریٹک پارٹی کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ کل تک اِس جماعت نے یہ ہوا کھڑی کی تھی کہ ریاست میں گورنر راج کیلئے عمر عبداللہ ذمہ دار ہیں جو آج غلط ثابت ہوگئی۔عمر عبداللہ کے مطابق 11ویں اسمبلی اختتام کو پہنچنے کے ساتھ ہی یہ بات عیاں ہوگئی کہ ساری خطا پی ڈی پی کی ہے جو انتکابی نتائج منظر عام پرآنے کے 27روز بعدحکومت بنانے سے قاصر ہے۔واضح رہے کہ پی ڈی پی نے گورنر راج کے نفاذ کیلئے یہ کہتے ہوئے عمر عبداللہ کو ذمہ دار ٹھہرایا تھا کہ ابھی اسمبلی کی مدت کار میں19جنوری تک کا وقت تھااور انہوں نے جان بوجھ کر نگرانی کے فرائض سے دامن چھڑالیاجبکہ عمر عبداللہ نے پی ڈی پی سرپرست مفتی محمد سعید پر الزام عائد کیا تھا کہ انہوں نے بی جے پی کے ساتھ ملکر6سال کے لئے وزارت اعلیٰ کا عہدہ حاصل کرنے کیلئے حکومت سازی کے حوالے سے تعطل برقرار رکھا اورریاست کو گورنر راج کی طرف دھکیل دیا ہے۔ سماجی رابطہ کی ویب سائٹ ٹویٹر پر ٹویٹ کرنے کا سلسلہ جاری رکھتے ہوئے عمر عبداللہ نے پیر کو ایک ٹویٹ کیا ہے کہ ’’گورنر راج کیلئے مجھے ذمہ دار ٹھہرانے کیلئے آج وہ سبھی الزامات مسترد ہوگئے جو پی ڈی پی کی طرف سے مجھ پر لگائے جارہے تھے بلکہ یہ بات بھی ثابت ہوگئی کہ ساری غلطی اُن کی ہی ہے‘‘۔یہ بات قابل ذکر ہے کہ گورنر راج کے بعد عمر عبداللہ نے ایک ٹویٹ کیا تھا کہ’’ اگر پی ڈی پی 19جنوری سے قبل حکومت بنانے میں کامیاب ہوتی ہے تو میں سرعام تسلیم کرلوں گا کہ وہ صحیح تھے اور میں غلط‘‘۔یاد رہے کہ جموں و کشمیر کی 11اسمبلی نے پیر یعنی19جنوری کو اپنی 6سالہ معیاد پوری کرلی تاہم 12ویں قانون ساز اسمبلی کے ممبران فی الحال غیر یقینی سیاسی صورتحال کے باعث حلف بھی نہیں لے سکے ہیں ۔

Advertisements

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

w

Connecting to %s

%d bloggers like this: