نقوی سرینگر وارد،سیلابی صورتحال کا جائزہ لیا

Naqviکشمیر میں سیلابی صورتحال کے پیش نظر حکومت ہند کے ایک کابینہ سیکریٹری اجیت سیٹھ نے ریاست کے چیف سیکریٹری محمد اقبال کھانڈے کے ساتھ ویڈیو کانفرنس کے دوران این ڈی آر ایف کی 8ٹیمیں وادی بھیجنے کا اعلان کیا جبکہ دو ٹیمیں پہلے ہی وادی پہنچ گئی ہیں۔ نیشنل ڈیزاسٹر رسپانس فورس یعنی NDRFکے 100اہلکاروں پر مشتمل دو ٹیمیں بھی پیر کی صبح بٹھنڈا پنجاب سے سرینگر وارد ہوئیں۔

اس کے علاوہ نئی دہلی سے فضائیہ کے خصوصی تیاروں میں مختلف قسم کے امدادی سامان کی بھاری مقدار بھی سرینگر پہنچائی گئی ۔ این ڈی آر ایف کے ڈائریکٹر جنرل نے بتایا کہ سرینگر بھیجی گئی دونوں ٹیمیں ہر طرح کے ساز وسامان اور مشینری سے لیس ہیں جبکہ غازی آباد اترپردیش میں NDRFکی مزید چار ٹیموں کو تیار حالت میں رکھا گیا ہے ۔ کابینہ سکریٹری نے کھانڈے کے ساتھ وادی میں پیدا شدہ سیلابی صورتحال کا جائزہ لیا۔ کابینہ سکریٹری نے ریاست کے چیف سکریٹری کو یقین دلایا کہ سیلابی صورتحال سے نمٹنے کے لئے این ڈی آر ایف کی 8ٹیمیں دہلی ، پٹنہ اور دیگر مقامات سے فوری طور پر روانہ کی جائیں گی ۔ یہ ٹیمیں جنوبی، وسطی اور شمالی کشمیر میں مقامات انتظامات کی مدد کریں گی۔چیف سیکریٹری اقبال کھانڈے نے اجیت سیٹھ کو جانکاری فراہم کرتے ہوئے بتایا کہ وادی کشمیر میں 3کنٹرول روم قائم کئے گئے ہیں جبکہ ٹرانسپورٹ سہولیات کے علاوہ ریسکیو  کیلئے سیلاب زدہ علاقوں میں کشتیوں کو بھی تیاری کی حالت میں رکھا گیا ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ ریاستی انتظامیہ مکمل طور کسی بھی صورتحال سے نمٹنے کیلئے متحرک ہے ۔ اس دوران وزیراعظم ہند نریندر مودی کی ہدایت پر بھارتی وزیر مختار عباس نقوی بھی سرینگر وارد ہوئے جہاں انہوں نے ریاستی وزراء سید الطاف بخاری ، عمران رضا انصاری اور سکھ نندن کمار کے ساتھ بات چیت کے دوران وادی میں سیلابی صورتحال کے بارے میں مکمل جانکاری حاصل کی۔ بھارتی وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ نے وزیراعلیٰ مفتی محمد سعید کے ساتھ فون پر بات چیت کی اور تازہ ترین صورتحال کے بارے میں دریافت کیا۔اس دوران وزیر مملکت برائے داخلہ کرن رجیجو نے بتایا کہ گزشتہ ستمبر کے سیلاب کے پیش نظر لوگوں کا خوف حق بجانب ہے جنہیں ایک بار پھر سیلاب کی صورتحال کا سامنا ہے ۔ انہوں نے کہا ’’ مرکزی اور ریاستی حکومتیں مل کر حالات سے نپٹیں گی اور اس کے لئے جو بھی ممکن ہو ، امداد فراہم کرائی جائے گی‘‘ ۔ انہوں نے کہا ہے کہ وہ ریاستی حکومت سے رابطے میں ہے اور جہلم میں پانی کی سطحوں میں اضافے کی صورتحال پر قریبی نظر رکھے ہوئے ہے ۔ ریاستی حکومت سے کہا گیا ہے کہ وہ امداد کے تعلق سے مطلع کرے جس کی اس کو ضرورت ہے ۔ اس دوران انڈین ائر فورس نے امدادی و راحت سامان سے لدے دو طیارے سرینگر بھیجے ہیں ۔ بھارتی فضائیہ کے مطابق اس نے اس مقصد کے لئے گجراج ’IL76‘ قسم کے طیارے استعمال میں لائے ہیں ۔

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: