نارہ بل ہلاکت:متاثرین کی نظریں عدالت پر مرکوز

نارہ بل واقعہ ،جس میں ایک 17سالہ نوجوان سہیل احمد صوفی پولیس کی راست فائرنگ کے نتیجے میں جاں بحق ہوگیا تھا، کے لواحقین نے اپنی ساری امیدیں اب عدالت کے ساتھ وابستہ کی ہیں۔ اس دوران ہلاکت میں ملوث اہلکاروں کے رشتہ داروں نے کئی بارسہیل کے لواحقین سے رحم کی اپیل کی ہے ۔سہیل کے بڑے بھائی اعجاز احمد صوفی نے کہا کہ ’’ہم نے انہیں کہہ دیا کہ یہ معاملہ پیسوں یا نوکری کا نہیں بلکہ ایک معصوم کے خون کا ہے اور اب جبکہ کیس عدالت میں ہے اسلئے عدالت کے فیصلے کا ہی انتظار کریں گے‘‘۔واضح رہے کہ 17سالہ سہیل کو 18اپریل اْس وقت جاں بحق کیا گیا تھا جب وہ گھر سے باہر آکر یہ دیکھنے کیلئے نکلا تھا کہ ہڑتال کال کے نتیجے میں اْس کا سکول بند ہے یا کھلا۔ہڑتال کی کال حریت (گ)نے سینئر حریت لیڈر اور مسلم لیگ سربراہ مسرت عالم بٹ کی گرفتاری کے خلاف دی تھی۔یاد رہے کہ پولیس نے اس سلسلے میں قتل کا کیس بھی درج کیا تھااور اعتراف کیا تھا کہ SOPکو خاطر میں نہیں لایا گیا تھا۔پولیس نے یہ یقین دہانی کرائی تھی کہ ملوث اہلکاروں کے خلاف سخت کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔ قابل ذکر ہے کہ پی ڈی پی بھاجپا مخلوط حکومت کے قیام کے بعد کسی عوامی مظاہرے پر راست فائرنگ کا یہ پہلا واقع ہے۔ اعجازنے کہا’’ہم نے ساری امیدیں عدالت کے ساتھ وابستہ کی ہیں اور امید ہے کہ ہمیں ضرور انصاف ملے گا‘‘۔انہوں نے کہا ’’سہیل کے قتل میں ملوث اہلکاروں کے لواحقین ہمارے پاس آکریہ گذارش کررہے تھے کہ قتل میں ملوث اہلکاروں کو معاف کرو لیکن ہم نے انہیں واضح الفاظ میں کہا کہ یہ پیسوں یا نوکری کا معاملہ نہیں ہے بلکہ ایک معصوم طالب علم کے خون کا ہے اور اب جبکہ کیس عدالت میں ہے آپ بھی عدالت کے فیصلے کا ہی انتظار کریں‘‘۔اعجاز نے کہا ’’ہم نے پہلے ہی اپنے بچے کی قربانی کے بدلے نوکری اور پیسے ٹھکرائے ہیں لیکن ہماری صرف ایک گذارش ہے کہ اس کیس میں زیادہ وقت نہ لیا جائے‘‘۔

Advertisements

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: